Wp/khw/انجم اعظمی

From Wikimedia Incubator
< Wp‎ | khwWp > khw > انجم اعظمی
انجم اعظمی
آژیک مشتاق احمد عثمانی
2 جنوری 10931(1931-01-02)ء
فتح پور، اعظم گڑھ ضلع، اتر پردیش، برطانوی ہندوستان
بریک 31 ‎‎جنوری‎ 1990 (عمر 59 سال)
کراچی،پاکستان
ہال بیکو ژاغہ سخی حسن قبرستان،پاکستان
ادبی نام انجم اعظمی
پیشہ شاعر، نقاد
زبان اردو
قومیت مہاجر
شہریت پاکستان کا پرچمپاکستانی
اصناف غزل، تنقید
نویوکو کوروم لب و رخسار
ادب اور حقیقت
چہرہ
لہو کے چراغ
ایوارڈ و اعزازات آدم جی ادبی انعام

پروفیسر انجم اعظمی (پیدائش: 2 جنوری، 1931ء - وفات: 31 جنوری، 1990ء) پاکستانو سوم تعلق لاکھاک اردو زبانو ممتاز شاعر اوچے نقاد اوشوئے۔

حالات زندگی[edit | edit source]

انجم اعظمی 2 جنوری، 1931ء فتح پور، اعظم گڑھ ضلع، اتر پردیش، برطانوی ہندوستانہ پیدا ہوئے[1][2]۔ ھتوعو اصل نام مشتاق احمد عثمانی اوشوئے۔

شاعری[edit | edit source]

  • لب و رخسار
  • لہو کے چراغ
  • چہرہ
  • زیر آسماں

تنقید[edit | edit source]

  • ادب اور حقیقت
  • شاعری کی زبان

نمونۂ کلام[edit | edit source]

غزل

فریبِ غم ہی سہی، دل نے آرزو کر لی برا ہی کیا ہے، اگر تیری جستجو کر لی
غلط ہے، جذبۂ دل پر نہیں کوئی الزام خوشی ملی نہ ہمیں جب تو غم کی خو کر لی​
بٹھا کے سامنے تم کو بہار میں پی ہے تمہارے رِند نے توبہ بھی روبرو کر لی
وفا کے نام سے ڈرتا ہوں، اے شہِ خوباں تم آئے بھی تو نظر جانبِ سبو کر لی
کہاں سے آئیں گے انداز بے پناہی کے ابھی سے جیبِ تمنا اگر رفو کر لی
زمانہ دے نہ سکا فرصتِ جنوں انجم بہت ہُوا تو گھڑی بھر کو ہائے ہو کر لی [3]

حوالہ جات[edit | edit source]